Our _Blog_

Our Daily News

پاکستان نژاد برطانوی باکسر عامر خان نے اپنی اہلیہ فریال مخدوم سے علیحدگی اختیار کرنے کا اعلان کردیا

Boxer Amir Khan splits with wife in a bitter public row

some image some image

لندن، پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔پہلے عامر خان نے ٹویٹ کیا کہ انھوں نے اور فریال نے علیحدہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ انھوں نے ان کے لیے نیک خواہشات کا بھی اظہار کیا۔ لیکن اس کے بعد دونوں نے ایک دوسرے پر الزامات کا تبادلہ شروع کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے فریال کی خاطر اپنے اہلخانہ اور دوستوں کو چھوڑ دیا۔

عامر خان نے یہ شکوہ کیا کہ فریال ہمیشہ سے کسی اور کے ساتھ رہنا چاہتی تھی اور وہ دوسرا شخص کوئی اور نہیں، ایک باکسر ہے۔عامر خان نے کہا کہ انہیں فریال سے علیحدگی پر کوئی دکھ نہیں۔ عامر خان نے یہ بھی لکھا کہ وہ جلنے والے نہیں۔ اس لیے فریال انھیں اس شخص کی تصویریں نہ بھیجے جسے وہ پسند کرتی ہے۔

انھوں نے فریال کے کچھ میسیجز بھی شیئر کیے جو بظاہر کسی اور شخص سے بات چیت پر مشتمل ہیں۔ انھوں نے کہا کہ یہ ہے وہ فریال جس کی خاطر میں نے خاندان اور دوستوں تک کو چھوڑ دیا۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اظہار خیال کرتے ہوئے عامر خان نے کہا کہ فریال اور میں نے باہمی رضامندی سے علیحدگی کا فیصلہ کر لیا ہے۔ میں اس وقت دبئی میں ہوں اور ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ فریال اس رشتے کو چھوڑ کر آگے بڑھ چکی تھیں اور ہمیشہ مجھے اس بات کا احساس دلاتی رہتی تھیں کہ وہ کسی اور شخص کے ساتھ رہنا چاہتی ہیں اور وہ کوئی نہیں بلکہ باکسر انتھونی جوشوا ہیں۔

عامر خان کی ٹوئٹس کے بعد فریال مخدوم بھی پیچھے نہ رہیں اور انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ آپ نے اپنے اہلخانہ کو اس لیے چھوڑا کیونکہ انہوں نے آپ کو لوٹا؟ میری وجہ سے نہیں۔ غلط باتیں کرنا بند کر دیں۔ انہوں نے کہا کہ آپ دیگر باکسروں پر اس لیے الزامات عائد کر رہے ہیں کیونکہ آپ کا کیریئر ختم ہو چکا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ عامر خان ہمیشہ الکحل اور خواتین کے گرد منڈلاتے رہتے ہیں، وہ برے رول ماڈل ہیں جو اپنے آپ کو مسلمان کہتے ہیں اور چیریٹی بھی چلاتے ہیں۔

London; After months of very public problems, including a family spat, rumours of a sex tape and cheating allegations Amir Khan and his wife Faryal sensationally split . Amir Khan of Mator, Kahuta and Bolton, who is worth £23million, announced their split over Twitter in a tweet reading 'So me and the wife Faryal have agreed to split. I'm currently in Dubai. Wish her all the best'.

The heated argument that proceeded is worlds away from the humble couple who gushed about one another at their engagement back in 2012 - but that's not the only thing to have changed.

Amir Khan has denied claims that his account was hacked after he and wife Faryal Makhdoom launched into a sensational Twitter spat, each accusing the other of cheating, after he announced their break-up.

The British boxer told followers he and wife Makhdoom had decided to go their separate ways after four years of marriage but after a stream of mud-slinging tweets, as he claimed she was sleeping with heavyweight champion Anthony Joshua, Makhdoom claimed they had both been hacked. What ever the outcome the Khan family have been left exposed in public.

پوٹھوار ڈاٹ کوم کا اٹھارواں یوم تاسیس، وٹفورڈ میں تیرہ اگست کو میلے کا انقعاد کیا جائے گا

پوٹھوار ڈاٹ کوم میلہ ،اس سال وٹفورڈ میں پوٹھواریوں کا سب سے بڑا اجتماع ہو گا

Pothwar.com mela to be held in Watford on 13th August

some image

سلاو، پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔۔ پوٹھوار ڈاٹ کوم اس سال اپنے اٹھارویں یوم تاسیس کی تقریبات کے سلسلے میں وٹفورڈ میں ایک میلے کا انعقاد کر رہی ہے۔یہ میلہ اتوار تیرہ اگست کو وٹفورڈ کے ہولی ویل کمیونٹی سنٹر میں ہو گا۔پوٹھوار ڈاٹ کو م کی ایگزیکٹو ٹیم کا کہنا ہے کہ وٹفورڈ میں ہونے والا یہ میلہ اس سال پوٹھواریوں کا سب سے بڑا اجتماع ہو گا۔

میلے میں مختلف ایونٹس کا انعقاد ہو گا جس میں نیزہ بازی، کبڈی، والی بال، آرم ریسلنگ(بینی) کے ساتھ ساتھ کبوتر باز اور تیتر باز بھی موجود ہوں گے۔ اس کے علاوہ شکاری کتے بھی عوام کی توجہ اپنی جانب مبذول کروانے کو موجود ہوں گے۔میلے میں ہر عمر کے افراد کی تفریح کا سامان مہیا کیا جا رہا ہے۔ بچوں کے لئے جھولے، باونسی کاسل ،خواتین کے لئے خریداری اور مرد حضرات کے لئے مختلف فوڈ اسٹالز اور اپنے ہم عصر دوستوں اور احباب سے ملاقات بھی رونق بڑھانے کو دستیاب ہو گی۔

میلے میں لائیو آن سٹیج موسیقی کے ساتھ ساتھ مشہور شعر خواں حضڑات بھی اپنے فن کا مظاہرہ کریں گے۔ڈھول ٹیم اور سمی ڈانس کی ٹیم بھی میلے کے حاضرین کے لئے اپنے فن کا مظاہرہ پیش کریں گے۔ویب سائٹ کے قارئین کے پرزور اصرار پر اس سال آل فیملی ایونٹ کا انعقاد کیا جا رہا ہے تاکہ ویب سائٹ کے قارئین اپنی فیملی کے ساتھ اس میلے میں شرکت کر سکیں۔

میلے میں کسی بھی مقابلے میں حصہ لینے کے لئے ، یا اپنے کاروبار یا کمپنی کی پروموشن کا سٹال لگانے کے لئے رابطہ کریں۔ خواتین اگر اپنی کسی کاریگری، فوڈ یا کسی ہنر کا سٹال لگانا چاہیں تو پلیز رابطہ کریں۔

Slough; Pothwar.com has announced to hold Pothwari cultural mela on 13th August 2017, The event is organised to celebrate Pothwar.com 18th anniversary. The mela will be held in Watford at the Holywell community centre.

The Pothwar executive team told that the mela will be biggest in South of England, The events so far organised are Naiza baazi, Kabbadi, Volleyball, Arm wrestling, Pigeon display, Tittar, Greyhound dogs as well as Pothwari entertainment with Dhol team along with Sammi dance.

Their will be entertainment for children as well as stalls for shopping and eating, Their is plenty of parking and fun day out for families.

Pothwar.com Chairman Mohammad Naseer Raja, MZ Bhatti MBE, Habib Rashid, Raja Umar Hayat said we are looking forward to making the mela family event and we still looking for more Pothwai entertainers and sportsmen and women to come forward and contact the website in order to participate.

پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کی گاڑی اور کار میں تصادم کے بعد نامعلوم افراد کا ان پر حملہ

Boxer Amir Khan attacked in road rage in Bolton, UK

some image

لندن، پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔۔۔ باکسر عامر خان کی رینج روور غلط ٹرن لینے کے بعد برطانیہ کے علاقے بولٹن میں ایک کار سے ٹکرا گئی جس کے بعد چند افراد نے انکا تعاقب کر کے گلی میں گھیر لیا اور پھر تشدد کا نشانہ بنایا ، باکسر کو ایک حملہ آور نے مکہ بھی رسید کیا ۔ ٹریفک حادثے کے وقت عامر خان اپنی گاڑی میں گھر کی جانب آرہے تھے کہ تعاقب کرنے والی کار میں سوار متعدد افراد نے انہیں ایک جگہ روک کر حملہ کیا اور مکا بھی مارااور پھر اپنی گاڑی میں فرار ہو گئے ، واقعے کے بعد باکسر عامر خان نے پولیس کو طلب کیا جنہوں نے مقدمہ درج کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ٹریفک حادثے کے بعد دونوں اطراف سے جھگڑا شروع ہوا جو ہاتھا پائی کی شکل اختیار کر گیا تاہم ٹریفک حادثے کی وجہ باکسر عامر خان کی غلط ڈرائیونگ تھی ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے سے پتہ چلتا ہے کہ اگلی گاڑی والے ڈرائیور یعنی باکسر عامر خان نے غلط ٹرن لیا جس کے بعد پچھلی کار سے تصادم ہوا اور پھرجھگڑا شروع ہو گیا ۔ مشتعل افراد نے پہلی گاڑی والے کو مکا رسید کیا اور پھر فرار ہو گئے

LONDON – Boxer Amir Khan of village Mator, Kahuta was attacked during a terrifying road rage incident after being chased through the streets by a group of men, as things seem to go bad to worse for the boxing champion in recent times.

Amir Khan was forced to call police after he was pranged by another vehicle as he drove through his hometown in a white Range Rover. Several men then jumped out of another car and one swung a punch at Amir during the confrontation in Bolton, Gtr Manchester.

Amir, 30, called cops following the incident, which was apparently prompted by him making a wrong turn, but no arrests have been made. A Greater Manchester Police spokeswoman said: “We were called to reports of road rage incident/assault.”

“It appears the person driving has made a wrong turn and this has angered the person behind them and there’s been an altercation. The driver of the first car was punched. There were no arrests

بیڈفورڈ سے نو منتخب رکن پارلیمنٹ اور پوٹھواری کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے محمد یاسین کا تعلق میر پور سے ہے

ٹیکسی ڈرائیور محمد یاسین اپنی صاف گوئی پر بہت مشہور ہوئے

New Labour MP Mohammad Yasin vows to 'stand up' for Bedford

some image some image

بیڈفورڈ،پوٹھوارڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔۔ نو منتخب لیبر ایم پی محمد یاسین کا آبائی تعلق پیر گلی گائیاں میرپور آزادکشمیر سے ہے، وہ ایک ٹیکسی ڈرائیور ہیں۔ یہ بات ان کے قریبی دوست کونسلر راجہ وحید اکبر نے بتائی جبکہ ایک انٹرویو میں محمد یاسین ایم پی نے کہا کہ انہیں اپنے پیشے پر فخر ہے۔ راجہ وحید اکبر نے مزید کہا کہ صرف لیبر پارٹی ہی ایک ٹیکسی ڈرائیور کو پارلیمنٹ تک پہنچا سکتی ہے۔

محمد یاسین ملٹن کینز کے علاقے میں ایک پرائیویٹ ہائر ٹیکسی ڈرائیور کے طور پر کام کرتے ہیں۔ایک موقع پر جب ان کے ووٹرز نے ان سے لیبر پارٹی کے منشور کے حوالے سے سوال کیا تو انھوں نے کہا کہ ابھی تک منشور پڑھنے کا موقع نہیں ملا جس پر ان کے ووٹرز کو انتہائی شاک لگا۔

ان کے حلقہ انتخاب کے سابق ایم پی کا تعلق ٹوری پارٹی سے تھا اور محمد یاسین کو ایک کمزور امیدوار تصور کیا جارہا تھا مگر ان کی کامیابی نے سب کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا۔متخب ہونے کے بعد انھوں نے اہل علاقہ کو یقین دلایا کہ بیڈفورڈ کے عوام کی امیدوں اور وعدوں کے مطابق کام کریں گے۔

Luton; Mohammad Yasin, The ex Government boys degree college student in Mirpur as stunned everyone by winning election for the labour party. Mohammad Yasin a Bedford Borough Councillor who works as a private hire driver in Milton Keynes, prioritised healthcare, education and police funding in his campaign.

He stunned voters by confessing he had not fully read Labour's manifesto at BoS' hustings event last week, but Bunyan Sports Centre erupted into cheers as Mr Yasin was announced victor of the battle for Bedford and Kempston in the early hours of Friday morning. He pipped Mr Fuller to the post by less than 800 ballots, a total of 22, 712 votes compared to the Tories' 21,923.

"Mohammad Yasin said I would like to thank Theresa May for calling this strong and stable election. It's not strong and stable anymore is it? "I would also like to thank my former MP Richard Fuller for his services to the community." He later told: "Anything not good for Bedford and Kempston I will stand up to it."

When questioned about his plans to halt the Sustainability and Transformation Plan threatening Bedford Hospital services, Mr Yasin said he could do better than his predecessor.First up is a meeting with the chief executive of Bedford Hospital and a letter to the Department of Health.

عشرت شاہ نے مئیر آف سلاو کا حلف اٹھا لیا

Councillor Ishrat Shah takes oath to be next mayor of Slough

some image

سلاو (نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کام افتخار وارثی)----- سلاو میں مقیم کوٹلی کی رہائشی عشرت شاہ نے مئیر آف سلاو کا حلف اٹھا لیا- عشرت شاہ لیبر پارٹی کی طرف سے بطور کونسلر سیاست میں آئی اور پہلی بار ہی کامیاب ہوئی اس کے بعد تین بار کونسلر منتخب ہوئی- مئی 2016 میں وہ ڈپٹی میئر منتخب ہوئی تھیں-

کونسلر سے ڈپٹی مئیر اور اب مئیر آف سلاو منتخب- عشرت شاہ کا تعلق کوٹلی آزاد کشمیر تتہ پانی سے ہے- عشرت شاہ ایک ملنسار ہیں اور ان کے دل میں عوام الناس کی خدمت کا جذبہ کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے ضرورت مندوں،بے سہارا اور دوسروں کی مدد دن کو عملی سیاست میں لے آئی- عملی سیاست میں بھی سچائی اور محنت کو اپنا وطیرہ بنایا- سلاو میں مقیم کشمیری اور پاکستانی کمیونٹی کی طرف سے عشرت شاہ کو مئیر آف سلاو کا حلف اٹھانے پر مبارکباد پیش کی گئی -

Slough; Councillor Ishrat Shah has been elected Mayor of Slough, A full ceremony was held where she was appointed the new mayor of Slough, Councillor Ishrat is a Labour councillor.

The Pakistani community along with other communities have welcomed the appointment of the new Mayor, Councillor Ishrat shah is from Kotli in Azaad Kashmir.

The mayor is the first citizen of the borough and is voted in by fellow councillors at the council's annual meeting in May every year. The mayor chairs council meetings, and attends many different functions in the borough. These include representing the council:

The mayor also hosts visits to the mayor's parlour from various groups and organisations.

برطانیہ میں مقیم 30 پاکستانی نژاد اگلے ماہ ہونے والے الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں

Thirty Pakistani-origin candidates in the run in upcoming UK elections

some image

سلاو(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کام افتخار وارثی) ----برطانیہ میں آٹھ جون کو ہونے والے انتخابات میں مختلف سیاسی جماعتوں کے ٹکٹس پر تیس پاکستانی نژاد برطانوی شہری بھی اپنی قسمت آزمائی کرنے کے لیے الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں- جن میں گیارہ خواتین بھی شامل ہیں- سیاسی جماعتوں کی طرف سے جاری کی گئی فہرست کے مطابق حزب اختلاف جماعت لیبر پارٹی نے دوسری جماعتوں کی نسبت زیادہ خواتین اور پاکستانی نژاد شہریوں کو ٹکٹ دیے ہیں -

لیبر پارٹی کی طرف سے چودہ پاکستانی نژاد برطانوی شہری انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں جبکہ لبرل ڈیموکریٹ پارٹی کی طرف سے 9 پاکستانی نژاد، کنزرویٹیو پارٹی کی طرف سے چھ پاکستانی اور سکاٹش نیشنل پارٹی نے ایک پاکستانی نژاد برطانوی شہری کو ٹکٹ دیا ہے- زیادہ تر پاکستانی نژاد برطانوی شہری لندن کے حلقوں سے انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں مختلف جماعتوں کی طرف سے سات پاکستانی نژاد برطانوی شہری میدان میں اتارے گئے ہیں -

یاد رہے کہ اس بار لیبر پارٹی نے اکتالیس فیصد نشستوں پر خواتین کو ٹکٹ جاری کیے ہیں لیبر پارٹی کی طرف سے پچاس اقلیتی امیدوار بھی انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں- حکمران جماعت کنزرویٹیو پارٹی کی طرف سے انتیس فیصد، لبرل ڈیموکریٹ پارٹی کی طرف سے تیس فیصد اور سکاٹش نیشنل پارٹی کی طرف سے تینتیس فیصد خواتین کو ٹکٹ جاری کیے گئے ہیں - ان انتخابات میں گیارہ پاکستانی نژاد برطانوی خواتین حصہ لے رہی ہیں- الیکشن کو ابھی دو ہفتے باقی ہیں تمام امیدواروں نے ڈور ٹو ڈور الیکشن مہم جاری رکھی ہوئی ہے-

As many as 30 candidates of Pakistani origin will be contesting the June 8 elections in the United Kingdom. According to lists released by different political parties, the Labour Party has given more tickets to Pakistani-origin men and women than any other party.

The Labour Party has 14 Pakistani-origin candidates to represent it in the elections. These include Shabana Mahmood, Khalid Mahmood, and Perry Barr in Birmingham, Yasmin Qureshi in Bolton, Naseem Shah and Imran Hussain in Bradford, and Rosena Allin-Khan in Tooting.

Amongst others, the Liberal Democrats have nine Pakistani-origin candidates, the ruling Conservative Party has six, while the Scottish National Party has one British-Pakistani to represent it during the election.

London has the highest number of Pakistani candidates, with seven contesting in various constituencies. Also interesting is the fact that Labour has chosen women candidates for 41 per cent of the seats. Moreover, as many as 50 members of various minority groups will also be representing the party.

لیبر پارٹی کے انتخابات دو ہزار سترہ کے منشور میں قانون زوجیت میں بڑی ترمیم متوقع

زوج کے ویزے کے لئے کم از کم آمدنی کے قانون میں ترمیم کی جائے گی

Labour party to scrap minimum income rule for foreign spouses

some image some image

لندن، نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، مسرت عزیز۔۔۔۔۔۔۔ اس سال آنے والے انتخابات کے لئے لیبر پارٹی کے منشور کے کئی اہم نکات سامنے آئے ہیں جن میں پاکستانی خاندانوں کے لئے بہت بڑی خوش خبری متوقع ہے۔بتایا گیا ہے کہ لیبر پارٹی قانون زوجیت میں ترمیم کر کے کم از کم آمدنی کی پابندی ختم کر رہی ہے۔

پارٹی کے قبل از وقت فاش ہوئے منشور کے مطابق لیبر پارٹی خاندانی حقوق کا تحفظ چاہتی ہے اور آمدنی والے قانون کی وجہ سے صرف دولتمند افراد ہی اپنے حقوق کا تحفظ کر پاتے ہیں۔اور جو افراد ساڑھے اٹھارہ ہزار سالانہ کما نہیں پاتے وہ اپنے بنیادی انسانی حقوق سے محروم رہتے ہیں۔یعنی وہ اپنی بیوی اور بچوں کے ساتھ ایک چھت کے نیچے نہیں رہ پاتے ۔

موجودہ قانون زوجیت سنہ دوہزار دس کے متعارف کروایا گیا تھا۔جس وقت موجودہ وزیر اعظم تھریسا مے برطانیہ کی وزیر داخلہ تھیں۔اس قانون کا مقصد ٹیکس دہندگان پر سے بوجھ کم کرنا تھا۔لیبر پارٹی کے منشور کے مطابق ویزہ کی درخواست میں کام کی غرض سے برطانیہ آنے اور اپنے اہل خانہ کے ساتھ ازدواجی زندگی شروع کرنے کے قوانین میں فرق ہونا چاہئیے۔

London; Labour would scrap the controversial income threshold that separates families and stops thousands of British citizens bringing their foreign husbands and wives to the UK.

The leaked draft version of the party’s manifesto says it does not believe that “family life should be protected only for the wealthy” and that it would replace the threshold with “an obligation to survive without recourse to public funds”.

Immigration rules currently require British citizens to earn more than £18,600 before their foreign partner can join them on a spouse visa. Critics say the policy discriminates against working class people on lower incomes.

The rule was introduced by the 2010 Coalition government when Theresa May was Home Secretary. It was introduced to reduce the burden on the taxpayer. The leaked version of the party’s draft manifesto says: “We believe fair rules mean that a distinction should be made between family connections and migrant labour.

نڑالی جبیر ،گوجرخان اور رائل نواب مانچسٹر کے اونر محبوب حسین کو ایشین ویڈنگ ایوارڈز کی تقریب میں بیسٹ ایشین ویڈنگ سپلائر کا ایوارڈ

Royal Nawab founder Mahbbob Hussain of Gujar Khan awarded in Manchester

some image

مانچسٹر، نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ۔۔۔۔۔ مانچسٹر میں ہونے والے ایشین ویڈنگ ایوارڈز کی تقریب میں رائل نواب آف مانچسٹر کو بہترین ویڈنگ سپلائر کے ایوارڈ سے نوازا گیا۔ واضح رہے کہ رائل نواب آف مانچسٹر کے مالک محبوب حسین کا تعلق نڑالی جبیر، گوجرخان سے ہے۔ برطانیہ میں ہونے والی شادی بیاہ کی تقریبات کے حوالے سے رائل نواب اپنی ایک منفرد حیثیت اور مقام رکھتا ہے۔

محبوب حسین نے جس وقت مانچسٹر میں واقع ایک سینما گھر کو شادی ہال میں تبدیل کیا تو کوئی نہیں جانتا تھا کہ ایک وقت رائل نواب برطانیہ میں شادی بیاہ کے حوالے سے رائلٹی کا نشان بن جائے گا۔رائل نواب کے قیام سے لے کر اب تک ایشین شادیوں میں کئی طرح سے جدت انگیز تبدیلیاں آچکی ہیں۔ مانچسٹر کے بعد حال ہی میں رائل نواب نے لندن میں بھی بینکوئٹ ہال کا آغاز کیا۔

ایشین ویڈنگ ایوارڈز کے دیگر کامیاب اداروں اور افراد کے نام یہ ہیں۔ شادی بیاہ کے لئے بہترین جیولری سپلائرز میں سائی فیشنز، بہترین ویڈنگ کیک کے لئے کیک گیلری، بہترین ویڈنگ کیٹرر کے لئے دیسی لائونج، بہترین ویڈنگ مووی میکر ایس ایم ڈیجیٹل، ڈی جے آف دی ائیر کے لئے سول ایشیا، ویڈنگ فلارسٹ کے لئے سپرنگ بنک فلاورز،، ویڈنگ اینٹرٹینر اور میوزک کے لئے دیسی ناچ اور دیگر کو ایوارڈز دئیے گئے۔

some image some image some image

Manchester; The founder of the Nawaab Restaurant Mahboob Hussain of village Narali Jabeer, Gujar Khan in Manchester was honoured with the Outstanding Contribution accolade at the Asian Wedding Awards. Mahboob Hussain from the Royal Nawaab Manchester took a chance when he transformed an old cinema into a wedding banqueting suite. The decision has in many ways revolutionised how Asian weddings were celebrated.

The ceremony at the Mercure Manchester Piccadilly Hotel celebrated the very best of Asian wedding suppliers from wedding planners to card makers. Tributes were also paid to two of the wedding industry’s most respected professionals at the annual Asian Wedding Awards in Manchester.

Tarla Somaiya, of Payal Events, and Robert Bell, of Barkers Catering Equipment Hire, both of whom who passed away in the last 12 months, and were described on the night as trailblazers in the Asian Wedding Industry.

AWARD WINNERS Accessories & Jewellery Supplier of the Year: Sai Fashions (Jewellery), Banqueting Hall of the Year: The Sheridan, Bridal Wear Designer of the Year: Alankar Sarees Cake Company of the Year of the year: The Cake Gallery Caterer of the Year: Desi Lounge DJ of the Year: Soulasia Roadshow Filmmaker of the Year: SM Digital Weddings Florist of the Year: Springbank Flowers Finishing Touches Supplier of the Year: B Inspired Grooms Wear Designer of the Year: Sherwani King Makeup Artist of the Year: Nida Glamour World Musician & Entertainer of the Year: Desi Nach Wedding Photographer of the year: Asia Burrill Wedding Planner of the year: Payal Events, Stationery Supplier of the Year: Ya Habibi Designs Toast Master of the Year: Stephen T Sanders Transport Supplier of the Year: Rolls Royce Chauffeurs Venue & Stage Decorator of the Year: The Wedding Fairy Venue of the Year: Thornton Manor

لندن کے پیش اماموں کا حملہ آوروں کا جنازہ پڑھانے سے انکار

Imams refuse to perform Namaz e janaza for London Bridge attackers

some image some image

سلاو(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کام افتخار وارثی) -----   لندن کے اماموں نے برج حملہ آوروں کی نماز جنازہ پڑھانے سے انکار کردیا ذرائع کے مطابق کم و بیش ایک سو انتیس مساجد کے اماموں نے مشترکہ طور پر برج حملہ آوروں کی نماز جنازہ پڑھانے سے انکار کردیا ہے

اور کہا مانچسٹر اور لندن میں ہونے والے دہشت گرد حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں اور ہماری ہمدردیاں ہلاک اور زخمی ہونے والے افراد اور ان کی فیملی کے ساتھ ہیں۔ جن کے پیارے ان دہشت گردوں کی وجہ سے ان سے بچھڑ گئے۔

کوئی بھی مذہب حملوں کی اجازت نہیں دیتا اور اسلام امن و بھائی چارے کا درس دیتا ہے حملہ آوروں کا کوئی مذہب نہیں۔ اور کوئی بھی سچا مسلمان کسی بے گناہ اور نہتے پر حملہ کی حمایت نہیں کر سکتا۔اسلام میں تو حالت جنگ میں بھی عورتوں اور بچوں پر ہاتھ اٹھانے سے منع کیا گیا ہے۔

London; More than 200 Muslim leaders from across the UK have signed a statement condemning the terror attack that took place in London on Saturday - and saying they will refuse to perform namaz e janaza the traditional Islamic prayers for the perpetrators at their funerals.

The statement was published on the website of the Muslim Council of Britain, the UK’s largest Muslim body, which described the decision as an "unprecedented move," noting that the signatories have "not only refused to perform the traditional Islamic prayer for the terrorist – a ritual that is normally performed for every Muslim regardless of their actions – but also have called on others to do the same."

Opening with a strongly worded condemnation of the recent terror attacks, the statement asserts that the terrorists' acts "alienate them from any association with our community for whom the inviolability of every human life is the founding principle."

وٹفورڈ میں مسلم کمیونٹی کی جانب سے اسلامک سنٹر کی تعمیر کے لئے فنڈریزنگ پروگرام کا انعقاد

بیرونیس سعیدہ وارثی کی خصوصی شرکت

Watford Muslim community unite for Muslim Youth Centre banquet at Hilton Hotel

some image

وٹفورڈ، نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، افتخار وارثی۔۔۔۔۔۔ ہلٹن ہوٹل وٹفورڈ میں وٹفورڈ کی مسلم کمیونٹی کے لئے نئے اسلامک سنٹر کی تعمیر کے لئے فنڈ ریزنگ ڈنر اور سٹیج پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ بیرونیس سعیدہ وارثی اس تقریب کی مہمان خصوصی تھیں۔ تقریب کے آرگنائزرز وٹفورڈ کے کونسلر حاجی منیر بھٹی اور نلہ مسلماناں کے زاہد زریں نے مہمانوں کے لئے استقبالیہ کلمات کہے۔

تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک اور نعتیہ کلام سے کیا گیا۔ مختلف فنکاروں نے سٹیج پر اپنے فن پارے پیش کیے۔ اس موقع پر بیرونیس سعیدہ وارثی نے اپنی سوانح حیات پر مبنی کتاب کے دستخط شدہ ایڈیشن حاضرین کے لئے پیش کیے اور اس کتاب کی فروخت سے حاصل ہونے والی تمام آمدنی اسلامک سنٹر کے لئے وقف کر دی۔

تقریب کی ایک اور خصوصیت کرکٹر کبیر علی کی آمد تھی۔ حاجی منیر بھٹی نے مخیر حضرات کا شکریہ ادا کیا جن کی آمد نے اس تقریب کو کامیاب بنایا۔وٹفورڈ مسلم سنٹر ٹرسٹ سنہ دوہزار بارہ میں معرض وجود میں آیا تھا۔ تقریب کی مزید تفصیلات کے لئے نیچے دی گئی ویڈیو ملاحظہ کیجئے۔

Watford; Banquet and fundraising dinner function was held at Hilton Hotel in aid of Watford new Islamic centre, large number of people gathered along with social and political personalities.

Local Watford councillor Haji Munir Bhatti of Doberan Kallan and Zahid Zarin of Nala Musalmana who is Chairman Watford new Islamic centre who welcomed members of the community and thanked their support in order to construct the centre.

Baroness Sayeeda Warsi of Bewal was guest of honour at the occasion and signing her book with all the money raised was given to support the centre, Cricketer Kabir Ali was also present with host of other local stars.

Over £100,000 was raised at the event, Haji Munir Bhatti thanked all the community members who attended the function. The Watford Muslim Youth Centre Trust was set up in May 2012 with the aim of establishing a multipurpose community centre in Tolpits Lane, Watford. This centre will be an interactive space offering a wide range of educational and recreational activities to people of all ages and backgrounds.

Watford, UK - For more details, Please watch the video below...

ووکنگ، برطانیہ میں پوٹھواری کمیونٹی کی جانب سے میر پور میں کورٹ نامی ادارے کے لئے ڈیڑکھ لاکھ پونڈاکٹھے کئے گئے

Pakistani and Kashmiri community in Woking raise mega amount for orphans in Mirpur

some image some image

ووکنگ، برطانیہ، محمد نصیر راجہ آف پوٹيھوار ڈاٹ کوم۔۔۔۔۔۔ ووکنگ میں پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی کی جانب سے میر پور میں قائم کورٹ نامی ادارے کے لئے ایک لاکھ پونڈ سے زائد کے فنڈز اکٹھے کیے گئے۔اس تقریب کا انعقاد امام شاہ جہاں مسجد ووکنگ، حافظ سعید ہاشمی اور سہیل بشارت کی جانب سے کیا گیا تھا ان دونوں کا تعلق کلر سیداں کے علاقے پہر ہالی سے ہے۔

فنڈ ریزنگ کی اس تقریب کا اہتمام ووکنگ کے مشہور ایونٹ سنٹر میں کیا گیا تھا جسے ووکنگ کی مقامی کونسل اور بزنس کمیونٹی نے سپانسر کیا۔ تقریب کے مین فنڈ ریزر حبیب ملک آف پہر ہالی تھے جو گلاسگو، سکاٹ لینڈ میں مقیم ہیں۔سینکڑوں افراد نے تقریب میں نہ صرف شرکت کی بلکہ فیاضی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ڈیڑھ لاکھ سے زائدرقوم جمع کیں۔

اس تقریب میں مقامی سیاسی اور سماجی شخصیات نے بھی شرکت کی جن کا تعلق پاکستان سے نہیں تھا۔نیک مقصد کی خاطر ان کی شرکت کو بے حد سراہا گیا۔کشمیر آرفن ریلیف ٹرسٹ سنہ دو ہار آٹھ کے تباہ کن زلزلے کے بعد وجود میں لائی جانی والی تنظیم ہے۔ اس ٹرسٹ کی جانب سے قائم کیے گئے سنٹر میں اس وقت چھ سو کے لگ بھگ بچے تعلیم حاصل کر رہے ہیں یہ ادارہ نہ صرف ان کی تعلیمی ضروریات بلکہ دیگر تمام ضروریات کا بھی خیال رکھتا ہے جن میں رہائش۔ کھانا اور دوسری تمام بنیادی ضروریات شام ہیں۔

some image

Woking, UK: The Pakistani and Kashmiri community members living in Woking set a example of unity by raising over £150,000 for orphans, The event was organised by Hafiz Saeed Hashmi and Sohail Basharat both of Pehar Hali, Kallar Syedan now living in Woking.

The event was held at HG Wells conference and event centre in Woking and was sponsored by local council and business community, The event host was Habib Malik also of Pehar Hali, Kallar Syedan who is settled in Glasgow, Scotland.

Hundreds of local Pakistani and Kashmiri community members joined in to raise funds for Korts orphanage in Mirpur, Total of £155,500 were raised and the total was announced by Hafiz Saeed Hashmi who is also Imam at the local historical Masjid Shah Jahan.

Social and political leaders were also present who appreciated the community bond. Kashmir Orphans Relief Trust (KORT) started after the devastating earthquake that happened on the 08/10/2005 in Pakistan & Azad Kashmir, it has over 600 orphans in its centre in Mirpur.

some image some image

Pothwar. COM

+44 7763249391 | pothwar@yahoo.co.uk
© Copyright Pothwar.com | Est. 2000-2016

new graphics