Our _Blog_

Our Daily News

کلر سیداں کے قر یب گیٹ لگا نے کے تنا ز عے پرفا ئر نگ کر کے سا س بہو کو مو ت کے گھا ٹ ا تا ر د یا گیا

Two women shot dead over land dispute in Takal, Kallar Syedan

some image

کلر سیداں، نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم ،اکرام الحق قریشی۔۔۔۔۔۔۔کلر سیداں کے قر یب گیٹ لگا نے کے تنا ز عے پرفا ئر نگ کر کے سا س بہو کو مو ت کے گھا ٹ ا تا ر د یا گیا د ہر ے قتل کی یہ و ا ر د ا ت چو آ خا لصہ کے گا ؤ ں ٹکا ل میں ہو ئی

تفصیلا ت کے مطا بق فر یقین میں گیٹ لگا نے پر تنا ز عہ چل ر ہا تھا گز شتہ ر و ز بھی معز ز ین علا قہ نے فر یقین سے مذ ا کر ا ت کر کے ا ن کے د ر میا ن صلح کر ا د ی تھی مگر پیر کی صبح متنا ز عہ جگہ پر ملز م نے کنکر یٹ ڈ ا ل کر گیٹ کا ر ا ستہ بند کر نے کی کو شش کی جس پر گھر میں مو جو د خو ا تین نے ا سے ا یسا کر نے سے منہ کیا تو ملز م نے چھت پر چڑھ کر خو ا تین پر فا ئر نگ شر و ع کر د ی

جس سے صو بید ا ر ا ما نت حسین کی 66سا لہ ا ہلیہ سفیہ بیگم شد ید ز خمی جبکہ ا ن کی بہو 27سا لہ سعد یہ حلیمہ مو قع پر ہی د م تو ڑ گئی سفیہ بیگم کو شد ید ز خمی حا لت میں کلر سید اں لا یا جا ر ہا تھا کہ ا س نے ر ا ستے میں ہی د م تو ڑ د یا ملز م جا ئے و قو عہ سے فر ا ر ہو گیا

کلر سید اں پو لیس نے پو سٹ ما ر ٹم کے بعد نعشیں و ر ثا ء کے حوا لے کر د ی ا و ر یا سر محمو د کی د ر خو ا ست پر ملز ما ن ذ و ا لفقار ا و ر عد نا ن طا ر ق کے خلا ف مقد مہ د ر ج کر کے تفتیش شر و ع کر د ی ہے ۔

Takal, Kallar syedan; Two women have been shot dead in village Takal in Union council Choa Khalsa in Tehsil Kallar Syedan, over a land dispute. The two women have been identified as Mother and wife of M Yasir of Takal.

M Yasir is well known in local area and runs a Sghawat tent services in Choa Khalsa bazaar. The man who shot dead the two women has been identified as Mohammad Zulfiqar.

the two families had a long running land dispute came to tragic end when the two women were confrented by Mohammad Zulfiqar and were shot dead in a tragic end to the land dispute.

Mohammad Zulfiqar is well known in Bewal as he works as a security guard at Al Saffa Public school, fled after committing murder. Kallar Syedan police have registered the murder report and are investigating.

وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی جانب سے سفارش پر پھلینہ گاؤں سے نور دولال سڑک کی منظوری

منصوبے پر 3کروڑ 77لاکھ کی لاگت آئے گی جس کے لیے ٹینڈر بھی طلب کیا جاچکا ہے

Ch Nisar Ali Khan approves Phallina to Noor Dolal road works in Kallar Syedan

some image

کلر سیداں؛ نمائندہ پوٹھوارڈاٹ کام ،اکرام الحق قریشی۔۔۔۔پنجاب حکومت نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی جانب سے سفارش پر پھلینہ گاؤں سے نور دولال سڑک کی منظوری دے دی ہے منصوبے پر 3کروڑ 77لاکھ کی لاگت آئے گی جس کے لیے ٹینڈر بھی طلب کیا جاچکا ہے۔

یہ سڑک پھلینہ پل سے ہوتی ہوئی تحصیل گوجرخان کے گاؤں نوردولال تک جائے گی جس سے دونوں اطراف کے لوگوں کا دیرینہ مطالبہ پورا ہوجائے گا۔ سڑک کی تعمیر سے نہ صرف درکالی معموری اور نور دولال کو آمدورفت میں آسانیاں پیدا ہونگی

بلکہ کلرسیداں اور مندرہ براۂ راست پھلینہ ڈیم کے راستے منسلک ہوجائیں گے اور کلرسیداں کے لوگوں کو گوجرخان اور مندرہ تک رسائی کے لیے براستہ چنگا بنگیال اور چوکپنڈوڑی بھاٹہ کی بجائے براہ راست پھلینہ کے راستے سفر کو جاری رکھ سکیں گے

ادھر بلدیہ کلرسیداں کے لیگی کونسلر محمد جنید بھٹی، عبدالوحید جنجوعہ، پرویز بھٹی ، رفیق بھٹی ، اشفاق جنجوعہ ، چوہدری محمد فاضل ، غلام عباس عبدالغفور بھٹی اور اہالیان پھلینہ نے سڑک کی منظوری اور تعمیر کے لیے پونے چار کروڑ کی خطیر رقم کی فراہمی پروفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا شکریہ ادا کیا ہے۔

Kallar Syedan; On the request of Interior Minister Ch Nisar Ali Khan, The Punjab Government has approved road works from village Phallina to Noor Dolal at the cost of 3 Caror and 77 Lakh rupees.

The Road construction will take place in Phallina, Kallar Syedan leading to Noor Dolal village situated in Gujar Khan, this will also benefit village Darkali Mahmuri linking with Noor Dolal.

The planned road works will link Mandra, Gujar Khan with Kallar Syedan via Phallina dam, This will also mean commuters will no longer need to travel vial Changa Bangyal, Chauk Pindori and Bhatta.

Ch Nisar Ali Khan has been praised by local villagers and appreciated that their demands have been met and delivered.

گوجرخان کے علاقے میں فائرنگ سے قتل ہونے والے باپ بیٹا کو پیر کے روز بلدیہ کلر سیداں کے گاؤں کنڈ میں سپردخاک کر دیا گیا

Murdered father and son buried in their native village of Kund, Kallar Syedan

some image

کلر سیداں؛ نمائندہ پوٹھوارڈاٹ کام ،اکرام الحق قریشی۔۔۔۔ گوجرخان کے علاقے میں فائرنگ سے قتل ہونے والے باپ بیٹا کو پیر کے روز بلدیہ کلر سیداں کے گاؤں کنڈ میں سپردخاک کر دیا گیا نماز جنازہ مین چیئر مین چوہدری صداقت حسین،چیئر مین چوہدری شفقت محمود،وائس چیئر مین بلدیہ چوہدری ضیارب منہاس،شیخ حسن ریاض،راجہ ظفر محمود،عاطف اعجاز،بیرسٹر ظفر اقبال چوہدری،چوہدری توقیر اسلم اور دیگر نے شرکت کی۔

یاد رہے کہ مقتولین اچھی شہرت کے حامل افراد تھے اور یہ گاڑیوں کی خریدوفروخت کا کاروبار کرتے تھے گزشتہ روز انہیں ایک شخص نے موبائل فون پر کال کی کہ وہ بیرون ملک جا رہا ہے اور اپنی گاڑی فروخت کرنا چاہتاہے اگر آ پ لینا چاہتے ہیں تو گوجر خان آ جائیں جس کے بعد دونوں باپ بیٹا شبیر بھٹی اور مدثر بھٹی اپنے کیری ڈبے میں کلر سیداں سے گوجرخان روانہ ہوئے ۔

ذرائع کے مطابق یہ جاتے وقت گھر سے آٹھ لاکھ سے زائد رقم لے کر روانہ ہوئے بعد ازاں ان دونوں کی نعشیں جنڈ نجار کے قریب ویرانے میں پڑی ہوئی ملیں دونوں کو انتہائی قریب سے گولیاں ماری گئیں نعشوں کے قریب ہی کیری ڈبہ کھڑا تھا ادھر وائس چیئر مین بلدیہ کلر سیداں چوہدری ضیارب منہاس نے واقعے کی شدید مزمت کرتے ہوئے ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔

گوجرخان(چوہدری فرزند علی ،نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم)۔۔۔۔ گوجرخان میں باپ بیٹے کو فائرنگ کر کے بے دردی سے قتل کر دیا گیا لاشیں نواحی قصبہ کے ویرانے میں پھینک دی گئیں،جیب سے شناختی کارڈاور تین لاکھ روپے نقدی نکلی،پولیس تھانہ گوجرخان مصروف تفتیش ہے

تفصیلات کے مطابق گوجرخان جنڈ نجار کوری کے قریب ویرانے سے محمد شبیر اور مدثر شبیر کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں جو رشتے میں باپ بیٹا ہیں اطلاع ملتے ہی پولیس تھانہ گوجرخان موقع پر پہنچ گئی دونوں کو فائرنگ کر کے قتل کیا گیا پولیس کے مطابق مقتولین کی جیب سے شناختی کارڈ اور تین لاکھ نقدی بھی برآمد ہوئی پولیس تھانہ گوجرخان مصروف تفتیش ہے لاشوں کو پوسٹمارٹم کیلئے تحصیل ہیڈکوارٹرہسپتال گوجرخان پہنچا دیا گیا ہے رات گئے تک ایف آئی آر درج نہ ہو سکی

Kallar Syedan; Murdered Mohammad Shabbir and Mudassar Shabbir (pictured above) of village Banhal and now were settled in village Kund were buried in their native village with large number of people along with social and political personalities.

According to sources the father and son were motor traders and they received a call in which a man had offered to sell his car as he was going abroad, both Mohammad Shabbir and Mudassar Shabbir went to Gujar Khan and were shot dead and their bidies were dumped in Jand Nijar Kass.

It is also reported that the pair had taken around eight lakh rps with them, Police found three lakh and id card from the murdred man. Gujar Khan police have so far not registered FIR.

Pothwar. COM

+44 7763249391 | pothwar@yahoo.co.uk
© Copyright Pothwar.com | Est. 2000-2017

new graphics