Our _Blog_

Our Daily News

دبئی میں کسی حادثے کی فوٹوگرافی کرنے پر پابندی، ایسا کرنے والے کو جیل جانا پڑے گا

Dubai Police warn not to take photos at accident sites

some image

دبئی(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم افتخار وارثی) ----متحدہ عرب امارات میں شاہراہوں پر حادثات ہونے کی صورت میں جائے حادثہ اور متاثرہ افراد یا اشیاءکی تصاویر اور ویڈیوز بنانے والے افراد پر جرمانہ عائد کرکے جیل بھیج دیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں پولیس نے شاہراہوں پر ہونے والے حادثات کی تصاویر اور ویڈیوز بناکر سوشل میڈیا ہر لگانے والے افراد پر جرمانہ عائد اور جیل بھیجنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

ابو ظہبی پولیس کے حکام نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام دیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے شہری متوجہ رہیں اور کسی بھی ایسی تصویر یا ویڈیو کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر پوسٹ کرنےسےگریز کریں اور شیئر بھی مت کریں۔ پولیس ترجمان میجر جنرل سلیم شاہین النوایمی کا کہنا تھا کہ 146انٹر نیٹ جھوٹی اور غلط معلومات سے بھرا پڑا ہے اور سوشل میڈیا کا استعمال کرنے والے افراد کوئی بھی تحریر یا پوسٹ آگے شیئر کرنے سے پہلے اس کے ذرائع معلوم کریں

ن کا کہنا تھا کہ ابو ظہبی پولیس نے سوشل میڈیا کی ویب سائٹز سے رابطہ کیا گیا ہے جس پر سماجی رابطوں کی ویب سائٹز کی انتظامیہ نے مثبت جواب دیا ہے، ہماری کوشش ہے کہ سوسائٹی کا مثبت چہرہ دنیا کو دکھایا جائے اور یہ صحیح سماجی رویہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ متحدہ عرب امارات کی انتظامیہ ساری ریاستوں میں سوشل میڈیا کے حوالے آگاہی مہم چلارہی ہے تاکہ شہریوں کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹز کے نقصانات سے آگاہ کیا جاسکے۔ پولیس کے ترجمان سلیم شاہین کا کہنا تھا کہ یو اے ای کے قانون کے تحت سائبر کرائم میں ملوث شہریوں کو آرٹیکل 21 کے تحت چھ مہینے کے لیے جیل جبکہ ڈیڑھ لاکھ سے پانچ لاکھ درہم تک جرمانے ادا کرنا ہوگا۔

Dubai; The Ministry of Interior has warned about posting photographs or video clippings of traffic accidents on the social networking sites, keeping in view respect for human dignity and the feelings of relatives of the deceased and those injured. In a statement, the ministry today said the circulation of these images "is deemed an irresponsible behavior and lack of a positive spirit among the citizenry. It is also a violation of the law."

It reiterated, "The circulation of these images is unacceptable as it can cause a psychological shock to parents when they view such images," and added that it is contrary to the UAE's authentic values derived from the Islamic concept of tolerance.

The ministry underlined that it would bring to book those who indulge in such undesirable behaviors. Earlier, activists had circulated on the social networking sites photos of two people who were killed in a traffic accident at a restaurant in the emirate of Ajman. Five others were wounded in the accident.

The police authorities were keen to disclose the circumstances surrounding the accident in a transparent and credible manner without any delay once necessary investigations were completed to inform public opinion about its findings. He added that these procedures were within the scope of the vision of the ministry to safeguard the security and safety of public.

سوئیں چیمیاں چکڑالی بدھال کا جوان دبئی میں انتقال کرگیا

Young man from Gujarkhan died in Dubai due to head injuries

some image

بیول (نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، :راجہ طارق ایوب)۔۔۔ گزشتہ ایک ماہ سے ہسپتال میں داخل سوئیں چیمیاں چکڑالی بدھال کا جوان دبئی میں انتقال کرگیا چکڑالی بدھال کا جوان معین ولد راجہ طلحہ جو کہ دبئی میں بسلسلہ روزگار مقیم تھا اور وہاں ایک حادثے میں زخمی ہو گیا تھا

ڈاکٹروں کے مطابق معین کو سر میں شدید چو ٹیں آ ئیں تھیں اوروہ وہا ں دبئی میں ہسپتال میں زیر علاج تھا ۔گزشتہ دن وہ وفات پا گیا معین کی میت پاکستان لائی گئی جہاں پر اس کی نماز جنازہ شام 4بجے اد ا کی گئی جنازہ میں سیاسی و سماجی شخصیات کے ساتھ ساتھ اہل علاقہ نے شرکت کی۔

Dubai; Raja moeen son of Raja Talah of village Chakrali Badhal, sui cheemian has died at a hospital in Dubai. He got injured in an accident which lead to his death. Moeen was living in Dubai due to work commitments.

According o medical staff at the hospital, Moeen had severe head injuries and couldn't recovered from it completely. Moeen's dead body was brought to Pakistan for burial. Local social and political figures were present at Janaza.

سعودی عرب سے پاکستان کے درمیان فلائی ناس کی جانب سے نئی پروازوں کا اعلان

flynas Adds New Routes to Lahore and Islamabad

some image

اسلام آباد، پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔۔ فلائى ناس نے 15 فروری 2018 سے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان نئی پروازوں کو شروع كرنےکا اعلان کیا ہے۔ سعودى عرب اور پاکستان کے درمیان علاقائی رابطوں کو بہتر بنانے كے سلسلے میں فلائی ناس نے نئی منزلوں تک پروازوں کے آغاز کر نے كا فيصلہ كيا ہے۔

ان پروازوں کے لئے جدید اور یکتا سہولیات سے مزین ایربس 320 اور بوینگ 767 طیارےاستعمال کئے جائیں گے۔ بکنگ کے لئے بکنگ ایجنٹ کے علاوہ سمارٹ فون اور فلائی ناس کی ویب سائٹ کی سہولت بھی دستیاب ہو گی -

فلائی ناس زائیرین حج و عمرہ کے لئے بھی خصوصی کشش رکھتا ہے - فلائى ناس کام یا حج اور عمرہ کے لئے سعودی عرب کے مسافروں کی خدمت کرتی ہے، اور یہ مسافروں کے لئے مزید سہولیات فراہم کرے گی تا کہ بہت آسانی سے سعودی عرب کے مختلف علاقوں تک پہنچ سكيں-

فلائی ناس مندرجہ ذیل پروازوں کا آغاز کر رہا ہے : 15 فروری 2018 سے ریاض 15 لاہور اور ریاض 15 اسلام آباد 15 فروری 2018 سے دمام 15 لاہور 17 فروری 2018 سے جدہ 15لاہور اور ہفتے ميں 1000 سے زيادہ پروازيں مملكت کے اندر مختلف 17 شهروں اور 17 بين الاقوامی منزلوں تک جاتى هيں

Islamabad - As part of its plans to expand its reach in Asia and open new strategic and international routes, flynas, announced its new flights between the kingdom and Pakistan starting February 15th 2018

flynas will launch flights from Dammam, Riyadh and Jeddah to both Lahore and Islamabad and will commence on the 15th of February with flights from Riyadh to Lahore. Riyadh to Islamabad flights will follow on the 16th of February, along with flights from Dammam to Lahore. While flights from Jeddah to Lahore will launch on the 17th of February.

These new flynas routes will serve business travelers from and to Saudi Arabia, as well as Hajj and Umrah visitors. It will also connect passengers to many different cities. flynas flights between the Kingdom and Pakistan will utilize A320 fleet, and new B767 aircraft.

سعودی حکومت کی جانب سے زائرین پر مسجد الحرام اور مسجد نبوی کی حدود میں تصاویر اور وڈیو بنانے پر مکمل پابندی

Saudi Arabia authorities bans photos, videos at Makka and Masjid e Nabawi

some image

 سعودی عرب  (نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ)۔۔۔۔ سعودی عرب حکومت نے زائرین پر مسجد الحرام اور مسجد نبوی کی حدود میں تصاویر اور وڈیو بنانے پر مکمل پابندی عائد کردی ہے۔ سعودی حکام کا کہنا ہے کہ یہ اقدام مقدس مقامات کی حفاظت اور زائرین کی سہولت کے پیش نظر کیا گیا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق سعودی وزارت خارجہ نے 12 نومبر کو احکامات جاری کئے اور غیر ملکی سفارت خانوں کو پابندی کے متعلق آگاہ کیا۔سعودی حکام کا کہنا ہے کہ اس قسم کی سیاحتی سرگرمیاں زائرین کے لئے عبادت میں خلل کا باعث بنتی ہیں اور زائرین کو عبادت کی حقیقی روح سے محروم کرتی ہیں۔

مقامی ذرائع کے مطابق وزارت حج کی جانب سے جاری کئے گئے سرکلر میں اس امر کی نشاندہی کی گئی ہے کہ مختلف ممالک سے آنے والے معتمرین اور حجاج حرمین شریفین میں اپنا زیادہ وقت تصویر کشی میں ضائع کرتے ہیں جس سے ان کی اور دوسروں کی عبادت میں خلل پڑتا ہے۔ یہ لوگ حرمین شریفین میں تصویریں بنا کر انہیں سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کر دیتے ہیں۔

وزارت کی جانب سے جاری کردہ سرکلر میں مزید کہا گیا ہے کہ ایسے معتمرین اور حجاج کرام جو اپنے موبائل فون، کیمرے یا وڈیو کیمروں کے ذریعے حرمین شریفین کے اندر یا باہر تصاویر بنائیں گے ان کے کیمرے اور موبائل ضبط بھی کئے جا سکتے ہیں۔ اس ضمن میں متعلقہ اداروں کو بھی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ اس امر کو یقینی بنائیں کہ کوئی معتمر یا حاجی حرمین شریفین میں تصویر کشی نہ کر سکے۔

Saudi Arabia; Saudi Arabia banned visitors from taking photos and videos at Islam's two holiest places. The decision to prohibit photos and videos in Mecca's Masjid al-Haram, and Medina's Masjid an-Nabawi.

The ban, which applies regardless of the objective and includes representatives of the media, was imposed to protect and preserve the holy sites, the statement said. The ban also applies to the masjid's' surrounding areas.

Saudi authorities cited disturbance of worshippers at the masjid's as another reason for the introduction of the measure. "In the event of a violation of the ban, imposed to ensure the carrying out of worship in a healthier way, tools used to take photos and videos will be confiscated and legal action will be taken," the statement said.

سعودی عرب میں غیر قانونی تارکین وطن کیخلاف فیلڈ مہم آج سے شروع

Saudi Arabia to launch anti-illegal residency campaign

some image some image

سعودی عرب، نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کوم، محمد نصیر راجہ سے۔۔۔۔۔۔ سعودی وزارت داخلہ آج سے مملکت کے تمام علاقوں میں اقامہ و محنت قوانین اور سرحدی سلامتی ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کی پکڑ دھکڑ کیلئے مشترکہ فیلڈ مہم شروع کریگی،مہم سے کسی بھی ملک کے تارکین مستثنیٰ نہیں ہونگے۔

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے جامع سیکیورٹی مہم کی منظوری دیدی،غیر قانونی تارکین کو سہولت دینے والوں کو بھی نہیں بخشا جائیگا۔ایوان شاہی نے 28مارچ 2017ءکو اقامہ و محنت و سرحدی سلامتی ضوابط کی خلاف ورزی کرنےوالوں کو 90روزہ مہلت دی تھی،پھر 25جون 2017ءکو تمام ممالک کے غیرقانونی تارکین کے لئے مہلت میں توسیع کردی گئی تھی

اس کے تحت غیر قانونی تارکین کو موقع دیا گیاتھا کہ اپنے خرچ پر ازخود مملکت سے وطن واپس چلے جائیں، ایسا کرنے والوں کو قید و جرمانے کی سزاؤں اور فنگر پرنٹس کے منفی اثرات سے استثنیٰ دیا گیا تھا،مہلت سے فائدہ اٹھاکر جانے والوں کو یہ رعایت بھی دی گئی تھی کہ وہ قانونی طریقے سے مملکت ملازمت کے ویزے پر دوبارہ آسکتے ہیں،ایوان شاہی نے مہلت میں مزید توسیع 14نومبر 2017ءتک کردی تھی، اب جبکہ14نومبر کو مہلت کا آخری دن ہے

لہٰذا وزارت داخلہ اور اسکے ماتحت تمام متعلقہ سرکاری ادارے غیر قانونی تارکین کو خبردار کیا ہے کہ 15نومبر 2017ءسے اقامہ و محنت اور سرحدی سلامتی قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کی پکڑ دھکڑ شروع کردی جائیگی۔ ایسے سعودی شہریوں اور مقیم غیر ملکیو ںکے خلاف بھی کارروائی ہوگی جو غیر قانونی تارکین کو آمد ورفت کی سہولت دینگے یا انہیں روزگار مہیا کرینگے یا انکے لئے رہائش کا بندوبست کرینگے،ہر ایک کو مقررہ سزا دی جائیگی۔

RIYADH: The Ministry of Interior will begin implementing a joint field campaign starting Nov. 15, 2017 until further notice, to arrest over-stayers and violators of residence, work and border security regulations, which will target expatriates, carriers, and operators.

The ministry called upon citizens and residents to abide by regulations and instructions that prohibit dealing, hiding, sheltering, transporting, operating or providing support to those who violate residency, employment and border security, pointing out that security authorities will apply penalties stipulated in the law to the maximum extent on violators (citizens as well as residents).

It concluded by calling for cooperation with security authorities, participation, reporting violators or those who support them by calling 999 and cooperating to achieve the objectives of the Nation without Violators campaign.

سعودی عرب میں پچاس لاکھ ریال مالیت کا سونا لوٹنے والے چھ پاکستانی گرفتار

Six Pakistani national held for stealing Dh14 million from Dubai exchange

some image

ریاض(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کام افتخار وارثی) ----   سعودی عرب میں چھ پاکستانیوں پر مشتعمل خطرناک گروہ ریاض پولیس نے گرفتار کر لیا- تفصیلات کے مطابق چھ پاکستانی افراد نے سونے کا شوروم بند کر کے جانے والے یمنی کارکن کو قابو کر لیا تھا اور اس کے ہاتھ پاؤں باندھ کر واپس شوروم میں لے آئے اور چابی چھین کر شوروم کا کھولا اور پچاس لاکھ ریال مالیت کا سونا لوٹ کر فرار ہوگئے

واردات کی اطلاع ملتے ہی ریاض کی پولیس حرکت میں آگئ اور رہزنوں کو گرفتار کرنے کے سخت احکامات جاری کر دیے اور ایک تجربہ کار اور ہنر مند ٹیم تشکیل دی اور ٹیم نے بالآخر ان رہزنوں کو گرفتار کر لیا اور واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی قبضے میں لے لی جو جعلی کاغذات پر ایجنسی سے کرائے پر لی گئی تھی

گرفتار ہونے والے چھ پاکستانیوں نے اعتراف کرلیا اس پاکستانی گروہ نے ایک گاڑی بھی چوری کی تھی جس میں لاکھوں کی مالیت کے بارہ سو لیپ ٹاپ رکھے ہوئے تھے اس گروہ نے سامان بیرون ملک پہنچانے کا بھی انتظام کر رکھا تھا - یاد رہے کے پاکستانی جہاں بھی جاتے ہیں اپنے ملک کا نام روشن کرتے ہیں

Riyadh, Saudi Arabi; Six Pakistanis were arrested for stealing Dh14 million from a money transfer company in Dubai. After a complaint from the firm that a gang stole money from the company located in Murraqabat area.

The Dubai police launched an investigation in coordination with its Sharjah counterparts and arrested six suspects near Sharjah City Centre.

The police recovered the money and referred all of them to legal authorities. A company official said three of the suspects were working at the company and hatched the plot to steal the money with three other people who came from Pakistan purposefully to commit the crime.

دوبئ میں پاکستانی نژاد برطانوی شہری شاہنزیب اختر کی قسمت ہی بدل گئی- ملین کی لاٹری نکل آئی

Pakistani traveller Shahzaib Akhtar wins $1m in Dubai Duty Free promotion

some image

لندن(نمائندہ پوٹھوار ڈاٹ کام افتخار وارثی)----    دوبئ میں پاکستانی نژاد برطانوی شہری کی قسمت ہی بدل گئی- ملین کی لاٹری نکل آئی- تفصیلات کے مطابق برطانوی نژاد پاکستانی شہری کی قسمت اس وقت بدلی جب دوبئ کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ہونے والی قرعہ اندازی میں شاہنزیب کا سیریز نمبر 246 میں لکی نمبر 3337 نکل آیا

جس کے بعد اس کا نام دوبئ کی لاکھ پتی افراد کی فہرست میں شامل کر لیا گیا انتظامیہ کی جانب سے شاہنزیب سے ابھی تک کوئی رابطہ نہیں کیا گیا شاہنزیب اختر 13واں پاکستانی شہری ہے جو ایک ملین کی لاٹری جیتا

Dubai: A UK-based Pakistani national Shahzaib Akhtar has won $1 million in Dubai Duty Free Millennium Millionaire Promotion.

Shahzaib Akhtar did not know he had won as he was unreachable when his ticket (No. 3337 in Series 246) was drawn on Tuesday morning in Concourse D, Dubai International Airport.

He is the 13th Pakistani national to have won $1 million in the promotion. Following the draw, the presentation of the previous Millennium Millionaire winner took place, where Shanthi Achuthan Kutty, an Indian housewife from Dubai, attended the presentation and witnessed the draw. Kutty thanked Dubai Duty Free for her win and a lifetime experience to witness the draw.

Pothwar. COM

+44 7763249391 | pothwar@yahoo.co.uk
© Copyright Pothwar.com | Est. 2000-2017

new graphics